103

کسی کو سیاسی سرگرمی کے نام پر تشدد کی اجازت نہیں دی جائے گی: کورکمانڈرز کانفرنس

کسی کو سیاسی سرگرمی کے نام پر تشدد کی اجازت نہیں دی جائے گی: کورکمانڈرز کانفرنس

کسی کو سیاسی سرگرمی کے نام پر تشدد کی اجازت نہیں دی جائے گی: کورکمانڈرز کانفرنس

آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے عمل کو سبوتاژ کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی، فوج آئینی مینڈیٹ اور الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق فرائض سرانجام دے گی: کورکمانڈرز کانفرنس— فوٹو: آئی ایس پی آر
آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے عمل کو سبوتاژ کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی، فوج آئینی مینڈیٹ اور الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق فرائض سرانجام دے گی: کورکمانڈرز کانفرنس— فوٹو: آئی ایس پی آر

آرمی چیف جنرل عاصم منیر کی زیر صدارت ہونے والی کورکمانڈرز کانفرنس نے عزم کا اعادہ کیا ہے کہ کسی کو سیاسی سرگرمی کے نام پر تشدد کی اجازت نہیں دی جائے گی اور فوج آئینی مینڈیٹ اور الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق فرائض سرانجام دے گی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل عاصم منیر کی زیر صدارت 262 ویں کور کمانڈرز کانفرنس ہوئی جس میں انتخابات میں الیکشن کمیشن کی معاونت کے لیے فوج کی تعیناتی پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

فورم نے کہا کہ کسی کو سیاسی سرگرمی کے نام پر تشدد کی اجازت نہیں دی جائے گی،  آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے عمل کو سبوتاژ کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی، فوج آئینی مینڈیٹ اور الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق فرائض سرانجام دے گی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق کانفرنس کے شرکا کو بھارت کی ریاستی سرپرستی میں جاری دہشت گردی اور بھارت کی پاکستانی شہریوں کو نشانہ بنانے کی گھناؤنی مہم پر بریفنگ دی گئی۔

فورم نے اتفاق کیا کہ بھارت کا عالمی قوانین کی کھلم کھلا خلاف ورزی اور بھارت کا اصل چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب کیا جائے۔

آرمی چیف جنرل عاصم منیر کا کہنا تھاکہ پاکستان کی خودمختاری اورعلاقائی سالمیت مقدس اور ناقابل تسخیر ہے، ملکی خودمختاری، قومی عزت اور عوام کی امنگوں پر سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

شرکا کانفرنس نے کہا کہ عالمی برادری پہلے ہی بھارت کے مجرمانہ رویے پر تحفظات کا اظہار کرچکی ہے، عالمی برادری بھارت کے دنیا بھر میں قتل و غارت کے ریاستی طاقت کے استعمال پر شدید تحفظات کا اظہار کر چکی۔

فورم نے فلسطین کے عوام کی حمایت کا اعادہ  کیا اور غزہ تنازع کے منفی اثرات اورخطے میں پھیلاؤ کے امکانات کا بھی جائزہ لیا۔

فورم نے فلسطین میں فوری جنگ بندی کی ضرورت اوور فلسطین تنازع کے پرامن حل کی فوری ضرورت کو متفقہ طور پر تسلیم کیا جبکہ شرکائےکانفرنس نے  کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت کے عزم کا اعادہ کیا اور کہا کہ پاکستان کشمیریوں کی اقوام متحدہ قراردادوں کے مطابق اخلاقی، سیاسی او ر سفارتی حمایت جاری رکھے گا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق فورم نے اسمگلنگ، ذخیرہ اندوزی، منی لانڈرنگ، بجلی چوری کے خلاف اقدامات،  غیر قانونی تارکین وطن، غیر قانونی سرگرمیوں اور مجرمانہ مافیاز کے خلاف اقدامات کو سراہا جبکہ فورم نے معیشت اور عوام کی فلاح و بہبود پر مثبت اثرات کو بغیر رکاوٹ جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔

فورم کو فارمیشنز کی آپریشنل تیاریوں پر بھی بریفنگ دی گئی اور آرمی چیف نے فارمیشنز کمانڈرز کو پیشہ ورانہ مہارت کا معیار برقرار رکھنے، تربیت کے دوران بہترین کارکردگی اور جوانوں کے مورال و بہبود پر زور دیا۔

 آئی ایس پی آر نے بتایاکہ شرکائے کانفرنس نے  فوج کے افسران، جوانوں سمیت شہداکی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کیا۔

https://www.youtube.com/watch?v=5dQaSt5t_fg

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں