الیکشن میں من پسند فیصلے سےملک کو نقصان ہوگا، نواز شریف 126

اختیارات کا ناجائز استعمال نواز شریف نیب لاہور میں پیش نہ ہوئے

اختیارات کا ناجائزاستعمال نواز شریف نیب لاہور میں پیش نہ ہوئے

لاہور: رائیونڈ سے جاتی امراء تک سڑک کی مبینہ غیر قانونی تعمیر کے کیس میں قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو آج طلب کیا تھا لیکن وہ پیش نہ ہوئے۔

سابق وزیر اعظم کو آج نیب لاہور میں پیش ہونا تھا جس کے لیے ڈی جی نیب پنجاب سمیت تمام حکام موجود رہے اور سابق وزیر اعظم کی طلبی کا انتظار کرتے رہے۔

تاہم دفتری اوقات ختم ہونے تک سابق وزیر اعظم نواز شریف نیب کے سامنے پیش نہ ہوئے۔

یاد رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے 1998 میں رائیونڈ روڈ سے جاتی امراء تک غیر قانونی طور پر سڑک تعمیر کرانے کا الزام ہے۔

نیب نے اس سے قبل 21 اپریل کو بھی نواز شریف کو طلب کیا تھا تاہم لندن میں اہلیہ کی عیادت کی وجہ سے وہ پیش نہ ہوسکے تھے۔

نیب کے مطابق نواز شریف نے 1998ء میں بطور وزیراعظم اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے جاتی امراء تک سڑک تعمیر کروائی اور ان کے حکم پر سڑک کی چوڑائی 20 فٹ سے 24 فٹ کی گئی جس سے لاگت میں مزید اضافہ ہوا۔

نیب کا کہنا ہے کہ 17 اپریل 2000 کی تفتیش کے مطابق منصوبے پر 12 کروڑ 56 لاکھ روپے سے زائد کرپشن سامنے آئی جب کہ 2016 تک یہ انکوائری التوا کا شکار رہی اور 2016 کے بعد چیئرمین نیب نے براہ راست کیس کی تحقیقات کا حکم دیا۔

نیب کے مطابق سڑک کی تعمیر کے لیے ضلع کونسل کے کئی منصوبے بند کرائے گئے اور ایک اسکول اور ڈسپنسری کا بجٹ بھی سڑک کی تعمیر پر خرچ کیا گیا۔

اس کیس میں موجودہ وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف بھی نامزد ہیں جب کہ ضلع کونسل، ایل ڈی اے کے افسران اور ٹھیکیدار کو بھی طلب کیا جائے گا اور تفتیش مکمل ہونے پر احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کیا جائے گا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں