آر ایچ سی روہيلانوالی میں لیڈیز سٹاف و لیڈی ڈاکٹر انیکا ڈیوٹی روم بند کر کے موبائل پرخوش گپیوں میں مصروف 93

آر ایچ سی روہيلانوالی میں لیڈیز سٹاف و لیڈی ڈاکٹر انیکا ڈیوٹی روم بند کر کے موبائل پرخوش گپیوں میں مصروف

آر ایچ سی روہيلانوالی میں لیڈیز سٹاف و لیڈی ڈاکٹر انیکا ڈیوٹی روم بند کر کے موبائل پرخوش گپیوں میں مصروف

مظفرگڑھ (میاں خالد ندیم بھٹی بیوروچیف)آر ایچ سی روہيلانوالی میں لیڈیز سٹاف و لیڈی ڈاکڑ انیکا ڈیوٹی روم کوبند کر کے ہسپتال کی بیک سائیڈ میں بیٹھ کرسارا دن موبائل پرخوش گپیوں میں مصروف رہتا ہے


,آنےوالےمریض ذلیل وخوار ہونے لگے، اگرکوئی ان کوکہے باجی حفاظتی انجکشن لگادو یا ڈیلیوری کامسئلہ ہےتو ان سے بدتمیزی کی جاتی ہے ڈیلیوری والوں کو ڈی ایچ کیو مظفرگڑھ ہسپتال جانے کا کہتی ہیں


اور حفاظتی انجکشن والوں کواگلے ہفتے آنے کا کہہ کر ٹال دیتی ہے. کچھ عرصہ پہلےدو سو روپے الڑاساونڈ کا لیتے اگر کوئی پوچھ لیتا کہ سرکاری ہسپتالوں میں فیس نہیں ہوتی توان کو کہتی یہ آپ لوگوں کی خاطر پرآئیوٹ رکھی ہوئی ہے


جبکہ الٹرا ساؤنڈ کرنے والی لیڈی ڈاکڑ انیکا اکثر ڈیوٹی سے غاہب ھوتی ھیں .جب ان کے سےرابطہ کیا تو انہوں نے کوئی جواب نیہں دیا. آر ایچ سی روہيلانوالی کا لیڈیز عملہ گھروں میںبیٹھےتنخواہیں وصول کرتا ہے


اورچھوٹا عملہ فرعون بن کر مریضوں کو پریشان کرتا ہے. عوامی و سماجی حلقوں نے ڈپٹی کمشنر اور سی ای او ہیلتھ مظفرگڑھ سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے

شئیرکریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں