نوازشریف کو بی کلاس الاٹ، مریم کا بہتر سہولیات لینے سے انکار 133

نوازشریف کو بی کلاس الاٹ، مریم کا بہتر سہولیات لینے سے انکار

نوازشریف کو بی کلاس الاٹ، مریم کا بہتر سہولیات لینے سے انکار

راولپنڈی: سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کو اڈیالہ جیل میں بی کلاس دے دی گئی جب کہ مریم نواز نے جیل میں بہتر سہولیات لینے سے انکار کردیا۔

ایون فیلڈ ریفرنس کے کیس میں سزا پانے والے نوازشریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو گزشتہ روز وطن واپس پہنچنے پر لاہور ائیرپورٹ سے گرفتار کیا گیا جس کے بعد انہیں راولپنڈی کی اڈیالہ جیل منتقل کردیا گیا۔

ذرائع کے مطابق نواز شریف اور مریم نواز کو جیل میں رکھنے سے متعلق پلان میں تین مرتبہ تبدیلی کی گئی جس کے بعد نواز شریف کو اڈیالہ جیل میں بی کلاس منتقل کر دیا گیا۔

مریم نواز کو سہالہ ریسٹ ہاؤس منتقل نہیں کیا جائے گا، ذرائع

جیل مینول کے مطابق بی کلاس میں ٹیلی ویژن، اخبار اور بیڈ کی سہولت دی جاتی ہے جب کہ اٹیچ باتھ روم، پنکھا اور ایک مشقتی بھی دیا جاتا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مریم نواز کو گزشتہ رات اڈیالہ جیل میں ہی رکھا گیا تھا اور انہیں سہالہ ریسٹ ہاؤس منتقل نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، انہیں خواتین کے سیل میں منتقل کیا گیا ہے۔

مریم نواز کا خط

اڈیالہ جیل میں قید مریم نواز نے بہتر سہولیات لینے سے انکار کردیا ہے۔مریم نواز نے ایک خط لکھا ہے جسے ان کی ٹیم نے سوشل میڈیا پر پوسٹ کیا ہے۔

خط میں کہا گیا ہےکہ مجھے جیل سپرنٹنڈنٹ نے جیل میں بہتر سہولیات لینے کے لیے درخواست دینے کا کہا جس پر بی کلاس لینے سے انکار کردیا ہے۔

ان کا کہنا تھاکہ اڈیالہ جیل میں عام قیدیوں کی طرح رہوں گی، مجھے عام قیدیوں والا کھانا دیا جائے، وہ گھر سے کھانا نہیں منگوائیں گی اور نہ ہی انہیں گھر کا کھانا فراہم کیا جائے۔

مریم نواز کےخط کا عکس
مریم نواز کےخط کا عکس

مریم نواز نے مزید کہا کہ مجھے قیدی بنایا گیا ہے تو جیل میں ایک قیدی کی طرح زندگی گزاروں گی، یہ میرا ذاتی فیصلہ ہے جو کسی دباؤ کے تحت نہیں لیا۔

ذاتی سامان جیل منتقل

نوازشریف اور مریم نواز کا لاہور سے لایا گیا ذاتی سامان بھی اڈیالہ جیل منتقل کردیا گیا۔ سابق وزیراعظم کا ذاتی اسٹاف سامان لے کر اڈیالہ جیل پہنچا جس میں کپڑے، شیونگ کا سامان اور دیگر چیزیں شامل ہیں جب کہ سامان میں نوازشریف کی ادویات بھی شامل ہیں۔

نوازشریف اور مریم میڈیکل چیک اپ میں صحت مند قرار

ذرائع کے مطابق نواز شریف اور مریم نواز کا میڈیکل چیک اپ بھی کیا گیا جس میں میدْیکل ٹیموں نے دونوں کو صحت مند قرار دیا۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ کے پاناما کیس سے متعلق 28 جولائی 2017 کے فیصلے کی روشنی میں نیب نے شریف خاندان کے خلاف 3 ریفرنسز احتساب عدالت میں دائر کیے تھے، جو ایون فیلڈ پراپرٹیز، العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسمنٹ سے متعلق ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں