سپریم کورٹ کا خیبرپختونخوا میں غیر متعلقہ افراد سے سیکیورٹی واپس لینے کا حکم 253

سپریم کورٹ کا خیبرپختونخوا میں غیر متعلقہ افراد سے سیکیورٹی واپس لینے کا حکم

سپریم کورٹ کا خیبرپختونخوا میں غیر متعلقہ افراد سے سیکیورٹی واپس لینے کا حکم

پشاور: سپریم کورٹ نے آئی جی خیبرپختونخوا کو غیر متعلقہ افراد سے سیکیورٹی واپس لینےکا حکم دے دیا۔

چیف جسٹس پاکستان نے سپریم کورٹ پشاور رجسٹری میں مختلف کیسز کی سماعت کی۔

عوام کو بنیادی سہولیات فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری تھی جو نہ کرسکی: چیف جسٹس
عوام کو بنیادی سہولیات فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری تھی جو نہ کرسکی: چیف جسٹس

دورانِ سماعت آئی جی پی خیبرپختونخوا صلاح الدین خان محسود عدالت میں پیش ہوئے تو چیف جسٹس نے ان سے استفسار کیا کہ آپ کا نام آئی جی صلاح الدین خان ہے؟ آپ کی بہت تعریف سنی ہے، دہشت گردی میں آپ کا بہت نقصان ہوا ہے۔

اس موقع پر چیف جسٹس نے آئی جی خیبرپختونخوا سے پوچھا کہ غیر متعلقہ لوگوں کے پاس کتنی پولیس فورس سیکیورٹی کے نام پرہے؟

آئی جی نے بتایا کہ 3 ہزار کے قریب اہلکار سیکیورٹی پر موجود ہیں۔

چیف جسٹس نے آئی جی خیبرپختونخوا کو غیر متعلقہ افراد آج رات تک سیکیورٹی واپس لینے کا حکم دیا۔

اس پر آئی جی صلاح الدین نے عدالت کو آج رات تک غیر متعلقہ افراد سے سیکیورٹی واپس لینے کی یقین دہانی کرادی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں